کشمیر میں اننت ناگ کا ابھرتا فٹبال کھلاڑی لشکر طیبہ میں شامل، کنبہ والوں کا رو رو کر برا حال

سری نگر: کشمیر کے ایک خاندان پر اس وقت ایک خبر بجلی بن کر گری جب انہیں یہ معلوم ہوا کہ ان کے20سالہ ہونہار بیٹے ماجد خان نے، جو ایک ذہین طالبعلم ہونے ساتھ ابھرتا ہوا فٹبال ستارہ تھا،دہشت پسند تنظیم لشکر طیبہ میں شمولیت حاصل کر لی ہے۔
اس خبر کو سنتے ہی اس کی والدہ عائشہ خان بلک بلک کر رو پڑی اور سینہ کوبی کرتے ہوئے اپنے بیٹے سے واپس آجانے کی فریاد کرنے لگی۔اس کے گھر مٰں تقریباً دس خواتین اسے سنبھالنے میں لگی تھیں لیکن صرف ’ماجد واپس آجا‘ کی گردان کر رہی تھی۔
اس کا کہنا تھا کہ مجھے کچھ نہیں چاہئے مجھے میرا بیٹا لوٹا دو۔ماجد خان بی کام کے سال دوئم کا طالبعلم تھا۔اور اننت ناگ کے گورنمنٹ ڈگری کالج میں زیر تعلیم تھا۔ وہ دسویں اور بارھویں کے امتحان میں اعلیٰ نمبرات سے کامیاب ہوا تھا۔وہ شہر کا ایک بیترین فٹبالر بھی تھا۔

Title: heartbreak for anantnag family as only son a talented footballer joins let | In Category: کشمیر  ( kashmir )